+447504950603 info@shahinshah.com Cradley Heath West Midlands Birmingham UK

سویٹی کی لالی

سویٹی پیاری پیاری بھولی بھالی لڑکی تھی جسکی ہمسائی نے ایک بکری پال رکھی تھی، سویٹی نے ضد کر کے اس بکری کا بچہ لے لیا ۔ سویٹی نے اس کا نام لالی رکھا۔ لالی شرارت کی پڑیا تھی ۔ سویٹی کے بہن بھائی ،پھوپھیاں، تائیاں غرض سب خاندان والے اکھٹے ایک حویلی میں رہتے تھے۔ سب اس سے پیار کرتے تھے۔ایک تولالی چھوٹی تھی ،پھر اپنی شرارتوں کی وجہ سے سب کی منظور نظر ہو گئی۔ موٹی تازی ،لالی اچھل اچھل کر چلتی۔ گھر کے باہر دکانوں کے سامنے سے کبھی آرام سے گزر جاتی اور کبھی منہ مار کر کچھ کھا لیتی۔ چھوٹی تھی، مگر محلے کے تمام جانوروں کی سردار تھی اور تمام دوسرے جانور اس سے ڈرتے تھے ۔
لالی مزے سے سیڑھیاں چڑھتی اور چھت پر جا کر سوئے ہوئے بچوں کو جگاتی۔ کبھی اس چار پائی پر اچھل کر جاتی تو کبھی دوسری پر۔ پھر بھاگ کر باہر چلی جاتی اور خوب سیر کرکے آتی۔ لالی کی امی کو فکر لگی رہتی کہ کوئی اسے اٹھا کر نہ لے جائے، مگر یہ بھی لالی تھی، ڈرتی تو کسی چیزسے بھی نہ تھی۔ موسم تبدیل ہو رہا تھا، گرمیاں جا رہی تھیں اور سردیوں کی آمد آمد تھی۔ صبح کا وقت تھا، موسم بھی بہت سہانہ تھا۔ٹھنڈی ٹھنڈی ہوا چل رہی تھی۔ لالی کے جی میں آیا کہ آج واک کروں۔ یہ سو چ کر باہر نکلی، مگر اسے دور کے راستوں کا علم نہ تھا۔ اچھل کو دکرتی سبزی فروش کی سبزی کومنہ مارتی آگے بڑھتی جا رہی تھی۔ چھوٹی سی نٹ کھٹ لالی اچھل کود کرتی بڑھتی جا رہی تھی کہ قلعہ پر پہنچ گئی۔ قلعے پر چڑھتے ہوئے پیر پھسلا تو سمبھل نہ سکی اورنیچے گرتی چلی گئی۔
نیچے مٹی کا بھرا ہوا ٹرک کھڑا تھا ۔ لالی اس میں جا گری۔ جیسے ہی لالی نیچے گری، ٹر ک چل پڑا جو جانے کہاں سے کہاں جا رہا تھا۔ ایک جگہ ٹرک رُکا تولالی چھلانگ لگا کر نیچے اتری۔آگے نہر تھی جو سیلاب کے پانی کی وجہ سے لبا لب بھری ہوئی تھی۔ ایک ٹیوب پانی میں تیرتا ، پانی کے بہاؤ کے رخ بہہ رہا تھا۔ لالی نے پانی میں چھلانگ لگا دی اور ٹیوب پر سوار ہو گئی۔ لالی کو خوب منزہ آرہا تھا اور وہ مزے سے گا رہی تھی۔لوگ حیران ہو کر لالی کو دیکھ رہے تھے کہ یہ کیسی بکری ہے جو ذرا بھی ڈر نہیں رہی اور مز ے سے نہر کی سیر کر رہی ہے۔ٹیوب دوسرے کنارے جا لگا تو لالی اچھل کر باہر آگئی۔ صبح کی گھر سے چلی ہوئی تھی ۔اب اسے بھوک بھی لگی ہوئی تھی۔ بھاگتی دوڑتی آگے جا رہی تھی کہ اسے دور سے مانوس سا علاقہ نظر آ یا۔غور کرنے پر معلوم ہوا کہ اپنے محلے کے پاس ہی کھڑی ہے۔چنانچہ اپنے محلے کی طرف بھاگی ۔

1 2

Leave a Comment

*